حلیمہ سلطان کے مداح اچانک نفرت کیوں کرنے لگے؟

 مئی 14 2020: (جنرل رپورٹر) وزیر اعظم عمران خان کی خواہش پر دکھایا جانے والا ترکی ڈرامہ ارتغرل غازی میں ایک خاتون جس نے حلیمہ سلطان کا کردار ادا کیا ہے تنقید کے زیر سایہ آ گئی ہیں

حلیمہ سلطان کا کردار ادا کرنے والی ترکش ایکٹریس جس کا اصل نام اسراء بلجیک ہے اس نے مغربی لباس پہنے ایک تصویر اپنے سوشل میڈیا انسٹاگرام کے اکاؤنٹ پر شئیر کی تو پاکستانی مداحوں نے جی بھر کر تنقید کی اور ناراضگی کا اظہار کیا

ان کی اس تصویر کو پوسٹ کرنے کے بعد پاکستانی مداحوں میں غم و غصے کی کیفیت ہے- ان کا کہنا ہے کہ حلیمہ سعدیہ کا مقدس کرادر کرنے والی خاتون کو مغربی لباس زیب تن کرنا مناسب نہیں لگتا

ایک مدثر خان نامی شخص نے تو گہرائی میں جا کر بہت تفصیل لکھ ڈالی- انہوں نے کہا کہ حلیمہ سلطان کا یہ پوز ان کی شخصیت کے بلکل منافی ہے- مزید برآں یہ کہا کہ میں نے اللہ سے دعا کی تھی کہ حلیمہ کو بچا لے انہون نے ڈرامے کی ایک قسط کی کہانی کا حوالہ دیتے ہوئے کہا

مدثر نامی شخص نے لکھا کہ آپ کی حقیقی زندگی آخرت کی ہے نا کہ دنیا کی سو آخرت کی تیاری کریں-  اس نے یہ بھی کہا کہ آپ کو حلیمہ سلطان کا کردار ادا کرنے پر فخر ہونا چاہیے سو آپ اپنی اسی حالت میں واپس آ جائیں

صرف ایک مدثر نہیں بلکہ ایسے کئی مدثر ہیں جو حلیمہ سلطان کی یہ تصویر دیکھنے کے بعد نفرت میں اتر چکے ہیں- انسٹاگرام پر کئی نوجوان اس تصویر لے کر تنقیدی کمنٹس پاس کر رہے ہیں تاہم حلیمہ سلطان کا کردار ادا کرنے والی ایکٹرس کا اس متعلق کوئی جواب سامنے نہیں آیا ہے

یہاں یہ واضح رہے کہ ارتغرل غازی پاکستان میں مقبول ترین سطح پر پہنچ چکا ہے جسے رمضان کی ہر شب پاکستان کے سرکاری ٹی وی پر دکھایا جا رہا ہے– یہ مسلمانوں کی فتوحات پر مبنی ایک سیریز ہے جو دنیا بھر میں مقبولیت کی تہہ میں سما چکی ہے

حال ہی میں ارتغرل کے کے بنانے والوں نے پاکستان کی اس ڈرامے سے والہانہ محبت پر اپنی خوشی کا اظہار کیا تھا- نیز ارتغرل ڈرامہ پچھلے کئی روز سے ٹویٹر پر ٹرینڈ کر رہا ہے


Pakis Daily

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *