شعیب اختر کی آئی سی سی پر ایک بار پھر سخت تنقید

 مئی 14 2020: (جنرل رپورٹر) شعیب اختر نے انٹرنیشنل کرکٹ بورڈ آئی سی سی پر ایک بار پھر سخت تنقید کی ہے

تفصیلات کے مطابق پاکستانی فاسٹ بالر شعیب اختر نے آئی سی سی کے غیر ذمہ دارانہ اور اور جانبدارانہ روے کی شدید تنقید کی ہے- انہوں نے کہا ہے پاکستان کرکٹ کونسل نے غیر جانبداری کو مکمل ترک کر دیا ہے

زرائع کے مطابق دو روز قبل پاکستانی فاسٹ بولر شعیب اختر نے سوشل میڈیا پر رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ایک تبصرے میں لکھا تھا کہ اسٹیو اسمتھ کو تین باؤنسز کروانے کے بعد چھوتی گیند پہ ہی آؤٹ کر دیتے تھے

ان کی اس ٹویٹ کو اس لنک پر کلک کر کے ملاحظہ کیا جا سکتا ہے

شعیب اختر کے اس بیان کے جواب میں آئی سی سی نے اپنے آفیشل سوشل میڈیا رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر کے اکاؤنٹ سے طنزیہ پوسٹ سے جواب دیا جس پر شعیب اختر نے شدید رد عمل.کا اظہار کیا

طنزیہ پوسٹ ایک میم پر مشتمل تھی جس میں ایک حبشی شخص پہلے اپنے موبائل سے کوئی پوسٹ پڑھتا ہے اور پھر طنزیہ لہجے میں مسکرایا یا ہنستا ہے– اس شخص کا یہ کردار پی سی بی کی جانب سے شعیب اختر کے بیان کے جواب میں لگایا گیا جس پر شعیب اختر نے بھی خوب ایک بار پھر تنقید کی

شعیب اختر نے کہا کہ اب صاف ظاہر ہو گیا ہے کہ انٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے کس طرح غیر جانبداری کو کھڑکی سے باہر پھینک رکھا ہے-انہوں نے مزید تنقید کرتے ہوئے کہا کہ لگتا ہے اب انٹرنیشنل کرکٹ کونسل آئی سی سی میں معاملات ایسے ہی کچھ چلتے ہیں

یاد رہے کہ پاکستانی فاسٹ بولر پہلے بھی سوشل میڈیا پر پی سی بی کے لیگل ڈائریکٹر تفضل رضوی پر عمر اکمل کی سزا کے معاملے میں شدید تنقید کر چکے ہیں جس کے باعث تفضل رضوی نے شعیب اختر پر ساڑھے چار کڑوڑ کے جرمانے کا قانونی نوٹس بھجوایا تھا

گزشتہ روز شعیب اختر نے آئی سی سی کے قانونی نوٹس کا جواب لکھا جس میں کہا کہ میرا مقصد پاکستان کرکٹ بورڈ میں موجود غلطیوں کو مستقبل کے لئے درست کروانا تھا

شعیب اختر نے کہا تھا کہ کہ پی سی بی بورڈ کے قانونی مشیر تفضل رضوی یوں ہی جان بوجھ کے کھلاڑیوں کے کیسز کو الجھاتے ہیں- انہوں نے یہ بھی کہا تفضل رضوی اسی وجہ سے مجھ سے بھی کیس ہار چکے ہیں- پی سی بی بورڈ کے قانونی مشیر تفضل رضوی کا کہنا تھا کہ شعیب اختر نے میرے خلاف سوشل میڈیا پر غلط باتیں کہی ہیں لہذا میں ہتک عزت کا دعوی دائر کروں گا- تفضل رضوی کا یہ بھی کہنا تھا کہ وہ سائبر کرائم ایکٹ کے تحت ایف آئی اے کو بھی درخواست دے رہے ہیں تا کہ شعیب اختر کے خلاف کاروائی کی جائے

Pakis Daily

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *