پاکستانی وفد ایف اے ٹی ایف سے اہم بات چیت کے لئے بیجنگ پہنچ گیا.

بیجنگ: اقتصادی امور کے وزیر حماد اظہر کی سربراہی میں ایک پاکستانی وفد فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف) کے ورکنگ گروپ سے بات چیت کے لئے چین کے دارالحکومت پہنچ گیا۔

عالمی منی لانڈرنگ اور دہشت گردی کی مالی اعانت نگاری کے ساتھ تین روزہ اہم روبرو بات چیت 21 جنوری (کل) سے شروع ہوگی اور 23 جنوری تک جاری رہے گی۔

وفد میں وزارت خارجہ ، وزارت داخلہ ، اسٹیٹ بینک آف پاکستان (ایس بی پی) ، کسٹمز ، نیشنل کاؤنٹر ٹیررازم اتھارٹی (این اے سی ٹی اے) اور فنانشل مانیٹرنگ یونٹ (ایف ایم یو) کے نمائندے شامل ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ پاکستان نے واچ ڈاگ کی گرے لسٹ سے باہر آنے کے لئے ایف اے ٹی ایف کے ممبر ممالک سے رابطہ کرنے سمیت کوششیں شروع کردی ہیں۔

اسلام آباد نے واچ ڈاگ کے ذریعہ اٹھائے گئے 150 سوالوں کے جواب میں 8 جنوری کو ایف اے ٹی ایف کو 650 صفحات پر نظرثانی کی رپورٹ بھیجی تھی۔

پاکستانی وفد ایف اے ٹی ایف ایکشن پلان کی سفارشات کی روشنی میں اکتوبر سے لے کر اب تک اس ملک کے اقدامات کے بارے میں تفصیلات پیش کرے گا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ایف اے ٹی ایف کے پیرس میں 16 فروری کو ہونے والے مکمل اجلاس میں دہشت گردی کی مالی اعانت اور منی لانڈرنگ سے نمٹنے کے لئے پاکستان کے اقدامات کا جائزہ لیا جائے گا کیونکہ اس فہرست سے ملک کے اخراج پر غور کرنے کے لئے بھی ووٹنگ ہوگی۔

پاکسیدیلی سے متعلق مزید خبریں پڑھیں: https://www.pakisdaily.com/category/national/

Farukh Tariq

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *