پاکستان کے تقریبا 3000 افغان طلباء کو اسکالرشپ اور امداد فراہم کرنے کے لئے پاکستان

اسلام آباد: انفارمیشن اینڈ براڈکاسٹنگ پر وزیر اعظم کے خصوصی مشیر ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے جمعہ کو کہا کہ پاکستان کے اعلی تعلیم کمیشن (ایچ ای سی) چار سالہ پروگرام کے تحت افغان طلباء کو 3000 سے زائد اسکالرشپوں کا انعام دے گا.

انہوں نے اے پی پی کو بتایا کہ “یہ اسکالرشپ مرحلے میں فراہم کی جائیں گی اور ہر قسم کے مختلف قسم کے طالب علموں کو فائدہ مند افراد (ان اسکالرشپپس) ملے گی.” “اس پروگرام کے تحت تقریبا 795 افغان طلباء پاکستان کو مطالعہ اور فائدہ کے لئے آئیں گے.

ان اسکالرشپ پاکستان کے وزیر اعظم، پاکستان اور ایچ ای سی حکومت سے موجود ہیں. ” انہوں نے اعلان کیا کہ افغان محصلین، جنہوں نے اپنے تعلیمی کیریئروں کی پیروی کرنے کے قابل اور جذبہ رکھتے تھے انہوں نے مزید کہا کہ “پاکستان ان طالب علموں کو میزبانی کرنے جا رہا ہے.

“انہوں نے اعلان کیا کہ ہر سال اس میں سکالرشپ کے پروگرام میں 500 طلباء کو مختلف میڈیکل کالجوں میں داخلہ دیا جائے گا، جبکہ تقریبا 100 طلباء دانتوں کے کالجوں میں داخلے کے لۓ جائیں گے.

انہوں نے اعلان کیا کہ 600 انجنیئروں کو مختلف انجینئرنگ یونیورسٹیوں میں داخلہ دی جائے گی. فردوس نے اعلان کیا کہ افغان طلباء پاکستان میں بہت سے MS اور پی ایچ ڈی کے پروگراموں میں داخل ہونے کے لئے سہولیات حاصل کریں گے.

انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان کی حکومت افغان طلباء کو سہولت دینے کے لئے آ رہی تھی، انہوں نے مزید کہا کہ یہ ایک بہت اچھا قدم تھا. انہوں نے وضاحت کی کہ طالب علموں کو، پروگرام سے فائدہ اٹھانا دونوں پاکستان کی افغان کیمپوں اور افغانستان کے مختلف صوبوں سے ہوگا.

guest writer

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *